35 سے زائد کھیلوں کے ساتھ یونیورسٹی آف لاہور سپورٹس گالا11 مارچ سے کھیلا جائیگا،دفاعی چیمپین سپورٹس سائینسز ڈیپارٹمنٹ پھر پرامید

لاہور:09مارچ(پلیئرزڈاٹ پی کے) 35 سے زائد کھیلوں کے ساتھ یونیورسٹی آف لاہور سپورٹس گالا11 مارچ سے کھیلا جائیگا،دفاعی چیمپین سپورٹس سائینسز ڈیپارٹمنٹ پھر پرامید،کھلاڑیوں کو بہترین سہولیات کی فراہمی اولین ترجیح، کھلاڑیوں کو اپنا ٹیلنٹ دکھانے کے لئے بھرپور مواقع فراہم کررہے ہیں،پروفیسر ڈاکٹر سید عامر گیلانی، ڈین فیکلٹی آف الائیڈ ہیلتھ سائینسز،یونیورسٹی آف لاہور
پاکستان میں سپورٹس سائینسزکے شعبہ میں جدید ترین تحقیق اور بہترین تعلیمی سہولیات کے حامل ادارہ یونیورسٹٰی آف لاہور کے زیر اہتمام سپورٹس گالا کا انعقاد 11 مارچ سے ہوگا، ایک ہفتہ تک جاری رہنے والے سپورٹس گالا میں 35 سے زائد کھیلوں میں کھلاڑی اپنے فن کے جوہر دکھائیں گے. اس سلسلہ میں دفاعی چیمپین اور جنرل ٹرافی ونر ڈایپارٹمنٹ آف الائیڈ ہیلتھ سائینسز کے زیراہتمام کھلاڑیوں کے لئے مورال مینجمنٹ کلینک کا اہتمام کیا گیا، دو نشستوں پر مشتمل اس کلینک میں ڈین آف فیکلٹی پروفیسر ڈاکٹرسید عامر گیلانی، معروف سپورٹس سائیکالوجسٹ اور ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹ الائیڈ ہیلتھ سائینسز پروفیسر ڈاکٹر جمشید احمد، پرائیڈ آف پرفارمنس ،ورلڈ چیمپین و اولمپین خواجہ جنید ، بلال گیلانی، ڈاکٹر فاروق احمد شعبہ میڈیسن، محمد عرفان علوی شعبہ فارمیسی ، سپورٹس آرگنائزرمحمدعامرسمیت شعبہ الائیڈ ہیلتھ سائینسز کے کھلاڑیوں کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی. یونیورسٹی آف لاہور آڈیٹوریم میں منعقد ہونے والی اس مورال مینجمنٹ کیمپ میں سپورٹس آرگنائزر محمدعامر نے کھلاڑیوں کی سابقہ سپورٹس گالا میں کامیابی اور بہترین پرفارمنس سے متعلقہ بذریعہ ملٹی میڈیا ایک تفصیلی رپورٹ پیش کی. انہوں نے بتایا کہ قومی کھیل ہاکی سمیت کرکٹ، فٹ بال، بیڈ منٹن، رگبی، والی بال، باڈی بلڈنگ، کبڈی ،سائکلنگ، ایتھلیٹکس، جوڈوکراٹے، ریسلنگ،تیراندازی سمیت 35 سے زائد کھیلوں میں کھلاڑی اپنے فن کے جوہر دکھائیں گے. جو کہ پاکستان میں اپنی مثال آپ ہیں.
پروفیسر ڈاکٹر سید عامر گیلانی، ڈین فیکلٹی آف الائیڈ ہیلتھ سائینسز،یونیورسٹی آف لاہور نے کھلاڑیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دفاعی چیمپین ہونے کے ناطے سپورٹس سائینسز ڈیپارٹمنٹ اس بارپھر پرامید ہے انہوں نے کہا کہ کھلاڑیوں کو بہترین سہولیات کی فراہمی اولین ترجیحات میں شامل ہے. اور سپورٹس گالا کے ذریعہ کھلاڑیوں کو اپنا ٹیلنٹ دکھانے کے لئے بھرپور مواقع فراہم کررہے ہیں. انہوں نے کھلاڑیوں کو بہترین کارکردگی دکھانے کے لئے سپورٹس مین سپرٹ کے اصولوں پر کاربند رہنے کی ہدایات بھی جاری کیں.
معروف سپورٹس سائیکالوجسٹ اور ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹ الائیڈ ہیلتھ سائینسز پروفیسر ڈاکٹر جمشید احمد نے مورال مینجمنٹ سیشن میں کھلاڑیوں کو میچ کے دوران پیش آنے والے مسائل انکے حل اور مشکلات کے تدارک پر سیرحاصل معلومات فراہم کیں، انہوں نے کہا کہ سپورٹس انجری کے امکانات کو کم سے کم کرنے کے لئے کھلاڑیوں کو کھیل کے قوانین کی پاسداری کو یقینی بنانا ہوگا، انہوں نے کہا کہ یونیورسٹی آف لاہور کا شعبہ الائیڈ ہیلتھ سائینسز پاکستان میں سپورٹس کے لئے جدید ریسرچ اور تعلیمی میدان میں قابل تقلید اقدامات کررہا ہے. جس سے نہ صرف پاکستان بلکہ بیرون ممالک سے بھی طالب علم استفادہ کررہے ہیں.
1994 ہاکی ورلڈ کپ چیمپین گولڈ میڈلسٹ، پرائیڈ آف پرفارمنس ، اولمپین خواجہ جنید سپورٹس کنسلٹنٹ یونیورسٹی آف لاہور نے کھلاڑیوں کو مورال مینجمنٹ کے حوالے سے پروفیشنل معلومات فراہم کیں، کھلاڑیوں میں مقابلے بازی کے رجحان اور مثبت سرگرمیوں سے کردارسازی کی اہمیت کے اصولوں پر روشنی ڈالی.
یادرہے کہ یونیورسٹی آف لاہور کا شمارسپورٹس سائینسز کے شعبہ میں پاکستان میں ان ٹاپ لیڈنگ یونیورسٹیز میں ہوتا ہے جو کہ ایک بڑی تعداد میں پی ایچ ڈی پروفیسرز کے ساتھ ساتھ کھیل کے میدانوں میں دنیا بھر میں پاکستان کا سبز ہلالی پرچم بلند کرنے والے سپورٹس آئیکون کھلاڑیوں پر مشتمل سٹاف ممبرز کے ہمراہ تعلیمی تحقیقی اور کھیلوں میں جدید تقاضوں سے ہم آہنگ تعلیمی سہولیات بہم پہنچا رہی ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں