پی ایچ ایف اجلاس غیرآئینی ہے،منی لانڈرنگ،ویزوں سمیت دیگرسوالات اٹھ رہے ہیں،کانگریس ممبران کی جگہ رشتہ دار بٹھائے،سابق اولمپینز

اسلام آباد:26فروری(پلیئرزڈاٹ پی کے/ ضیاءبخآری) پاکستان ہاکی فیڈریشن کا اجلاس غیر آئینی ہے، منی لانڈرنگ ہوئی ، پی ایچ ایف نے غیر متعلقہ افراد کے ویزے لگوائے، ایشین ہاکی فیڈریشن میں پی ایچ ایف کی نمائیندگی کے لئے صدر خالد سجاد کھوکھرکا نام کس کارکردگی پر دیا گیا، کانگریس اجلاس میں منتخب کانگریس ممبران کی جگہ رشتہ دار، من پسند لوگوں کو بٹھا کر قوم اور حکومت پاکستان کی آنکھ میں دھول جھونکی گئی، صدر ہاکی فیڈریشن خالد کھوکھر اور سیکرٹری شہباز سینئر ہاکی کی جان چھوڑ دیں، وفاقی وزارت کھیل اور حکومت پاکستان پر تنقید کرکے مستعفی ہونے والے سیکرٹری شہباز سینئرآئینی طور پر اجلاس نہیں بلواسکتے، پاکستان ہاکی فیڈریشن نے فارن کرنسی اکاؤنٹ ہونے کے باوجود منی لانڈرنگ کی، 2015 سے 2019 تک غیر متعلقہ افراد کے یورپی و دیگر ممالک کے ویزے لگوائے گئے، تحقیقات کرائی جائیں، اولمپین منظور جونیئر، اولمپین راؤسلیم ناظم، اولمپین خواجہ جنید، اولمپین خالد بشیر، اولمپین نوید عالم، سندھ ہاکی ایسوسی ایشن کے سیکرٹری و سابق خازن پی ایچ ایف گلفراز خان،سیکرٹری کے ایچ اے حیدرحسین، ڈاکٹر ایس اے ماجد، کانگریس ممبرپی ایچ ایف علی عباس سمیت سندھ ، پنجاب، بلوچستان اور کے پی کے سے تعلق رکھنے والے ممبران کی پریس کانفرنس

تفصیلات کے مطابق پاکستان اولمپینز فورم کے زیراہتمام بلیو ایریا، اسلام آباد میں واقع مقامی ہوٹل میں ایک پرہجوم پریس کانفرنس منعقد کی گئی جس میں قومی کھیل کی تباہی و برابادی کے ذمہ دارپاکستان ہاکی فیڈریشن کے موجودہ ارباب اختیار صدر خآلد سجاد کھوکھر اور سیکرٹری شہباز سینئر کو قرار دیتے ہوئے پی ایچ ایف کے کانگریس اجلاس کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا. پاکستان ہاکی کے مایہ ناز لیجنڈ کھلاڑی اور دنیائے ہاکی میں سے سے زیادہ میڈلز جیتنے والے کھلاڑی و سابق کپتان اولمپین منظور جونیئرکی سربراہی میں ہونے والی پاکستان اولمپینز فورم پریس کانفرنس کے شرکاء نے پاکستان ہاکی فیڈریشن کے اجلاس کو غیر آئینی قرار دیا

پاکستان ہاکی کو سب سے زیادہ میڈلز اور فتوحات دلانے والے گولڈن پلیئراولمپین منظور جونیئر نے پریس کانفرنس کی ابتداء کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کا اجلاس غیر آئینی ہے، شہباز سینئر مستعفی ھونے کے بعد اجلاس کیسے بلواسکتے ہیں، صدر ہاکی فیڈریشن کو شہباز کے استعفیٰ واپسی کے فیصلہ کو پی ایچ ایف آئین18.2.3 کے تحت کانگریس سے منظوری لینا تھی جو کہ نہ لی گئی،پی ایچ ایف ایجنڈا میں اس کا ذکر تک موجود نہیں ، پی آئی اے کے ملازم شہباز سینئر جو کہ وزارت کھیل اور حکومت پاکستان پر شدید تنقید کرتے ہوئے مستعفی ہوئے انکی واپسی غیرآئینی طریقہ سے ہوئی انہوں نے کہا کہ پاکستان اولمپینز فورم کے پلیٹ فارم سے وفاقی وزارت کھیل برائے بین الصوبائی رابطہ کو اس صورتحال کی بابت مطلع کردیا گیاھے. منظور جونیئر نے پاکستان ہاکی فیڈریشن میں کی گئی کرپشن کو بے نقاب کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کو پیٹرن ان چیف کہنے والے ادارے کے ارباب اختیار منی لانڈرنگ میں ملوث ہیں، چیمپینز ٹرافی میں ہالینڈ میں 70 ہزار یورو قومی ٹیم کے مینجر نے ادھار لئے جس کی واپسی کے لئے پی ایچ ایف کے اکاؤنٹنٹ عدنان شاہد کے ذریعہ اس رقم کو پاکستان سے ہنڈی کے ذریعہ منتقل کیا گیا، انہوں نے کہا کہ 2015 سے 2019 تک تحقیقات کرئی جائیں کہ پی ایچ ایف نےغیرمتعلقہ افرادکو یورپی ممالک سمیت دیگر ملکوں کے ویزے لگوا کردیئے.اولمپین منظور جونیئر نے پاکستان ہاکی فیڈریشن کے ارباب اختیار کو انکی جانب سے کی گئی بے ضابطگیوں پر آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ پی ایچ ایف کی ناک کے نیچے بیٹھ کراکاؤنٹنٹ عدنان شاہد نےاپنی بیوی سمیت آسٹریلین ویزا کی غلط معلومات پر مبنی درخواست جمع کرائی کہ وہ پاکستان ہاکی ٹیم کے دورہ آسٹریلیا کے لئے انتظامات کے سلسلہ میں جانا چاہتا ہے، انہوں نے کہا کہ صدر ہاکی فیڈریشن خالد کھوکھر، شہباز سینئر کی حکومت اور وزارت کھیل کے خلاف ہرزہ سرائی اور اکاؤنٹنٹ کی جانب سے کئے گئے اختیارات کے تجاوز پر نوٹس جاری کرنے کی بجائے منتخب کانگریس ممبران کو ان غلطیوں کی نشاندہی کرنے پو نوٹس جاری کرتے پھر رہے ہیں.

پاکستان ہاکی فیڈریشن کے سابق خازن اورسندھ ہاکی ایسوسی ایشن کے سیکرٹری گلفرزاحمد خان نے سندھ سے آئے ہوئے وفد ڈاکٹر ایس اے ماجد سینئر نائب صدر سندھ ہاکی ایسوسی ایشن، حیدر حسین سیکرٹری کراچی ہاکی ایسوسی ایشن سمیت دیگر نمائندگان کے موقف کو بیان کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کے انتخابات جعلی اور غیر آئینی ہیں. پی ایچ ایف انتخابات میں سندھ ہاکی ایسوسی ایشن کی نمائیندگی غیر آئینی حیثیت رکھتی ہے. سندھ اولمپک ایسوسی ایشن کی زیرنگرانی ہماری انتخابات ہوئے جس کو پی ایچ ایف تسلیم نہیں کرتی . جعلی اور بوگس سندھ ایسوسی ایشن بٹھا کرپی ایچ ایف نے انتخابات کا ڈرامہ رچایا.اس پر سندھ ہاکی ایسوسی ایشن کی جانب سے پی ایچ ایف کو قانونی نوٹس بھی جاری کرچکے ہیں.ڈاکٹر ایس اے ماجد ، حید حسین اور گلفرازاحمد خان نے کہا کہ پاکستان ہاکی کو خالد سجاد کھوکھر اور سیکرٹری شہباز سینئر نے اس حال تک پہنچا دیا ہے کہ لوگ اب گندےانڈے ، جوتےاور ٹماٹرلے کر ہاتھوں میں پھر رہے ہیں، قومی کھیل کی اس قدر تباہی تاریخ میں کبھی نہیں ہوئی

پاکستان ہاکی کے ٹیکنوکریٹ اولمپین راؤسلیم ناظم نے کہا کہ افسوس کی بات ہے کہ منتخب کانگریس ممبران کی بجائے پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن سے سزایافتہ ممبر اور رشتہ داروں کو اجلاس میں بٹھا کر قومی کھیل کے منتظم ادارے کی تذلیل کی گئی. انہوں نے کہا کہ پی ایچ ایف آئین میں سزایافتہ شخص عہدے کے اہل نہیں لیکن پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کی جانب سزا بھگتنےکے بعد معافی مانگنے پر باقی سزا معاف کرانے والے کوکانگریس اجلاس میں شامل کرنا قومی کھیل کے ادارے کے آئین کی دھجیاں بکھیرنے کے مترادف ہے. انہوں نے صدر ہاکی فیڈریشن خالد سجاد کھوکھر کی ایشین ہاکی فیڈریشن میں کوٹہ سیٹ پر نامزدگی کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ خالد کھوکھر نہ تو اچھے کھلاڑی اور نہ ہی اچھے ایڈمنسٹریٹر کے طور پر پرفارمنس کے حامل ہیں انکا نام کس طریقہ کار کے تحت پاکستان ہاکی فیڈریشن نے ایشین ہاکی فیڈریشن کو بھجوایا؟ انہوں نے کہا کہ آپ اندازہ کرسکتے ہیں کہ دنیائے ہاکی میں سب سے زیادہ گولڈ میڈل رکھنے والا کھلاڑی اولمپین منظور جونیئراگر اس بات پر سراپا احتجاج ہے تو اس میں معاملہ میں ہاکی فیڈریشن کی غیرسنجیدگی کا اندازہ آپ بخوبی کرسکتے ہیں

پاکستان ہاکی کے کھلاڑی اولمپین خواجہ جنید نے کہا کہ پاکستان ہاکی ٹیم کی بری پرفارمنس سب کے سامنے ہے. پلاننگ اور مینجمنٹ کے فقدان کے باعث پاکستان ہاکی فڈریشن کے ارباب اختیار نے ٹیم مینجرز تبدیل کیئے، کئی کوچز تبدیل کرڈالے، ورلڈ کپ کے بعد 12 کھلاڑیوں کو تبدیل ڈالا، لیکن کوئی فرق نہیں پڑا ، انہوں نے کہا کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کے ارباب اختیار سےمیں مطالبہ کرتا ہوں کہ ایک مرتبہ اپنے آپ کو بھی تبدیل کریں ، پاکستان ہاکی خود بخود ٹھیک ہوجائے گی.

دنیائے ہاکی میں پینلٹی کارنرسپشلسٹ کے طور پر اپنا لوہا منوانے والے اولمپین خالد بشیر نے کہا کہ قومی زرائع ابلاغ میں آئے روز پاکستان ہاکی فیڈریشن کی کرپشن کے قصے زبان زد عام پر رہتے ہیں جس سے قومی کھیل کا منتظم ادارہ مذاق بن کر رہ چکا ہے. میں پاکستان ہاکی فیڈریشن کے پیٹرن انچیف وزیر اعظم پاکستان عمران خان سے مطالبہ کرتا ہوں کہ فوری طور پر صدر ہاکی فیڈریشن خالد کھوکھرکو انکے عہدے سے برخاست کردیں اور انکی جگہ کسی ایماندار اورہاکی ویژن رکھنے والی شخصیت کو سربراہ ہاکی فیڈریشن مقرر کیا جائے

1994ورلڈ کپ گولڈ میڈلسٹ اور پرائینڈ آف پرفارمنس اولمپین نوید عالم نے کہا کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کو فرینڈزاینڈ فیملی کیئر سینٹر بنا کررکھ دیا گیا، پاکستان ہاکی فیڈریشن کے صدر خالد کھوکھر کے 5 رتن اور شہباز سینئر کے 5 رتن قومی کھیل کی تباہی اور بربادی کے ذمہ دار ہیں. انہوں نے کہا کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کے عہدیدارکلب لیول کی سیاست کررہے ہیں اور ملک بھر میں متوازی تنظیم سازی کرہے ہیں. اصل منتخب کانگریس ممبران کی جگہ رشتہ دار اور جعلی کلبوں کے عہدیدار بٹھا کر بند دروازوں میں میٹنگ کی جارہی ہے . پی ایچ ایف کا اجلاس غیر آئینی ہے. منتخب اراکین، خواتین کانگریس ممبرز، کے پی ٹی کے نمائندہ ، سندھ ہاکی اسوسی ایشن کے نمائیندگان سمیت آرمی سپورٹس ڈائریکٹوریٹ کے نمائیندہ کرنل اسد کو بھی میٹنگ ہاکی میں داخل نہیں کیا گیا جو کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کا غیر اخلاقی، غیر آئینی اقدام ہے. انہوں نے کہا پاکستان ہاکی فیڈریشن کی ہدایات کے تحت میڈیا کو بھی کوریج سے روکدیا گیا جس کی بھرپور مذمت کرتا ہوں. انہوں نے کہ کہ مطالبہ کرتے ہیں کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان پیٹرن ان چیف پی ایچ ایف ہونے کے ناطے ان بے ضابطگیوں کا نوٹس لیں، پاکستان ہاکی کا انفراسٹرکچر تباہ و برباد کردیا گیا، ڈومیسٹک ہاکی پر ایک پائی خرچ نہی کی گئی، اصل کانگریس ممبران کی جگہ رشتہ دار اور ہاں میں ہاں ملانے والے بھرتی کرلئے گئے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں