“پی ایچ ایف پہ لعنت”کا نعرہ بلند کرنے والےمحمدآصف سندھ انڈر17ہاکی میں بےضابطگیوں پرروتےہوئےہاکی چھوڑگئے

کراچی:28اکتوبر(پلیئرزڈاٹ پی کے / ضیاءبخاری) “پی ایچ ایف پہ لعنت”کا نعرہ بلند کرنے والےمحمدآصف ایکبارپھرمیدان میں،سندھ انڈر17ہاکی میں بےضابطگیوں پرروتےہوئےہاکی چھوڑگئے، ایسی ہاکی پر لعنت بھیجتا ہوں، محمد آصف

عبدالستارہاکی سٹیڈیم کراچی میں جاری انڈر17 انٹر ڈسٹرکٹ ہاکی چیمپئین شپ میں زائدالعمرکھلاڑیوں کے کھلائے جانے پر حیدرآباد سے تعلق رکھنے والے محمد آصف نے گذشتہ روز میڈیا پر روتے ہوئے سندھ انڈر 17ہاکی کی بےضابطگیاں بیان کرتے رہے. انہوں نے کہا کہ ایسی ہاکی پر میں لعنت بھیجتا ہوں جس میں 5 مرتبہ پاکستان بورڈ کے لڑکے کھلائے جارہے ہیں. انہوں نے میڈیا کو ثبوت دکھاتے ہوئے کہا کہ سندھ انڈر 17 ہاکی میں کالا قانون لاگو کیا جارہا ہے ایسے ہاکی کرنے سے بہتر ہے ہاکی کو بند کردیا جائے. انہوں نے کہا کہ میرے حیدرآباد کے لڑکوں کو زائد العمر قرار دیکر نکال دیا گیا لیکن دیگر زائدالعمرکھلاڑیوں کو نہیں نکالا گیا.

حیدرآباد سے تعلق رکھنے والے محمد آصف نے اعلان کرتے ہوئے کہا کہ میں لعنت بھیجتا ہوں ایسی ہاکی پر جس میں پاکستان بورڈ کے لڑکے کھلائے جارہے ہوں. انہوں نے روتے ہوئے کہا کہ میں ہاکی کو چھوڑتا ہوں. میں گراؤنڈ میں کبھی بھی نہیں آؤنگا.یہاں ہاکی کا کوئی قانون نہیں ،میں ہاکی کی خاطر گھربار کو چھوڑا لیکن افسوس کہ ہاکی میں کالا قانون نافذ ہے. انہوں نے کہا کہ میں نے بچوں پر بہت محنت کی ہے، ماجد نامی کھلاڑی کے ثبوت سمیت یونیورسٹی کے کھلاڑیوں کے ثبوت دکھاتے ہوئے انہوں نے روتے ہوئے ہاکی پر لعنت بھیجتے ہوئے ہاکی کو چھوڑنے کا اعلان کیا.

یاد رہے کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کے حالیہ انتخابات سے قبل سندھ میں کرائی گئی سکروٹنی کے دوران بھی محمد آصف نے اپنے انڈر14 کھلاڑیوں سمیت پاکستان ہاکی فیڈریشن کے متعین کردہ سکروٹنی آفیشلز کی موجودگی میں “پی ایچ ایف پہ لعنت” کے نعرے لگوائے تھے. محمد آصف سوشل میڈیا پر فیلڈ ہاکی کے نام سے ایک آئی ڈی بناکر پاکستان ہاکی فیڈریشن کے اقدامات پرحسب ضرورت تنقید بھی کرتےرہے ہیں. محمد آصف ماضی میں بھی اسی طرح ہاکی چھوڑنے کا اعلان کرچکے ہیں لیکن بعد ازاں فیصلہ بدل دیتے ہیں.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں