پاکستان ہاکی ٹیم بغاوت: سازش میں فیڈریشن ملوث نہیں تو ڈسپلنری ایکشن لے.بغاوت سے دنیا بھر میں ملکی بدنامی ہوئی.اولمپئین سلیم ناظم

فیصل آباد:31جولائی(پلیئرزڈاٹ پی کے / سید علی عباس) پاکستان ہاکی ٹیم کی بغاوت سے اٹلانٹا اولمپکس بغاوت کی تلخ یادیں تازہ ہوگئیں، پی ایچ ایف اس بغاوت میں شامل نہیں تو آئین کے مطابق ڈسپلنری ایکشن لیا جائے.حیرت ہے کہ پاکستان میں دہشت گردی کے کئی ماسٹر مائینڈ مارے جاچکے لیکن پاکستان ہاکی میں بغاوت کا ماسٹر مائینڈ کھلے عام دندناتا پھرتا ہے.پاکستان ہاکی ٹیم کے موجودہ چیف سلیکٹر اصلاح الدین سندھ سپورٹس سکینڈل کا 2 کروڑ روپیہ بینک میں دبائے بیٹھے ہیں وہ پیسہ کھلاڑیوں اور پاکستان ہاکی فیڈریشن کے حوالے کریں سابق لیجنڈ اولمپئین سلیم ناظم

پاکستان ہاکی ٹیم کے لیجنڈ اولمپئین سلیم ناظم نے کہا ہے کہ ہاکی ہمارا قومی کھیل ہونے کے ساتھ ساتھ دنیا بھرمیں سپورٹس کی بنیاد پر پاکستان کی شناخت کا باعث بھی ہے.لیکن پاکستانی ہاکی ٹیم کی اس بغاوت کے اعلان کے ساتھ دنیا بھر میں پاکستان کی بدنامی ہوئی. انہوں نے کہا کہ جان بوجھ کر ایک سازش کے ذریعہ کھلاڑیوں کو اس بغاوت میں ملوث کیا گیا اگر کھلاڑیوں کا اپنا مطالبہ ہوتا تو وہ ٹرائلز میں ہی حصہ نہ لیتے.یہ ایک سوچا سمجھا منصوبہ تھا جس کے تحت کیمپ اور ٹرائلز کے مرحلہ کے بعد ٹیم کے انتخاب کا عمل مکمل ہونے کے بعد اس سازش کو پروان چڑھایا گیا. انہوں نے کہا کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن اگر اس سازش میں ملوث نہیں تو ڈسپلنری ایکشن لے.انہوں نے کہا کہ فیڈریشن اس بات پر غور کرکےاس بغاوت پرپاکستان ہاکی فیڈریشن کا کوڈ آف کنڈکٹ اس معاملہ میں کیا کہتا ہے؟ انہوں نے کہا کہ کیا کھلاڑیوں نے اس بارے میں کوئی نوٹس ہاکی فیڈریشن کو دیا تھا؟ یا ڈیڈ لائین جاری کی تھی؟ ان سب معاملات کا سرا ایک جگہ پر جاتا ہے کہ اس سازش کو فیڈریشن کے سازشی ماسٹر مائینڈ نے کنٹرول کیا انہوں نے کہا کہ پاکستان میں دہشت گردی کے کئی ماسٹرمائینڈ مارے جاچکے لیکن پاکستان ہاکی میں بغاوت کا ماسٹر مائینڈ کھلے عام دندناتا پھرتا ہے اور کوئی اسکو پوچھنے والا نہیں. ابھی ہم 1996 کی بغاوت کو نہیں بھولے اس پرقومی کھیل کو نیا زخم دے دیا گیا.
سابق اولمپئین راؤسلیم ناظم نے کہا کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کے صدر خالد کھوکھر اگر ہم فوری اس بغاوت اور سازش کی کھوج میں ایک “آزاد انکوائری کمیٹی” بناتے تو انکے بیان کو سرایا جاتا لیکن انکا ویڈیو بیان محض آلو سے مٹی جھاڑنے کے مترادف ہے. انہوں نے کہا کہ پاکستان ہاکی کا نام دنیا بھر مین بدنام ہوا اور اس بغاوت کے کارفرما کو بے نقاب کرکے قوم کے سامنے لایا جانا چایئے. پاکستان ہاکی فیڈریشن میں اس اس بغاوت کے ماسٹر مائینڈ نے اپنی نااہلی ثابت کرنے کے ساتھ ساتھ صدر پی ایچ ایف خالد سجاد کھوکھر کر بھی نااہل ثابت کیا ہے جو اس سارے معاملہ کو مناسب طریقے سے حل کرنے میں ناکام رہے.
سابق اولمپئین راؤسلیم ناظم نے کہا کہ پاکستان ہاکی ٹیم کے موجودہ چیف سلیکٹر اصلاح الدین سندھ سپورٹس سکینڈل کا 2 کروڑ روپیہ بینک میں دبائے بیٹھے ہیں وہ پیسہ کھلاڑیوں اور پاکستان ہاکی فیڈریشن کے حوالے کریں جو کہ سپورٹس پر خرچ کیا جائے .سابق اولمپئین نے کہا کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کی دوکانات کی مد میں ماہانہ آمدن تقریبآ 10 لاکھ روپے سے زائد ہے جس سے ملازمین کی تنخواہیں پوری کرنا کوئی مسئلہ نہیں لیکن معاملات ایماندارانہ ہاتھوں میں نہیں. انہوں نے کہا کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن نے مارکیٹنگ مینجر،فنانس میجنر رکھے انکی کارکردگی کیا ہے. ان سے پوچھا جائے کہ پی ایچ ایف کے لئے انہوں نے کیا کیا؟

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں